Salman Rushdie urges west to be hard on Pakistan

www.qasir.co.nr

اپنی متنازعہ تحریروں سے جانے والے اور مغرب کے لاڈلے سلمان رشدی نے مغربی ممالک سے کہا ہے کہ انتہا پسندی کو کنٹرول کرنے کے لئے وہ پاکستان سے سختی سے نمٹیں ِ خود ساختہ جیمز بانڈ صاحب کا فرمانا یہ بھی ہے کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ ممبئی میں ہونے والے دھماکوں میں پاکستان کا ہاتھ ہے ِ یعنی جو بات ابھی تک امریکی اور بھارتی جاسوسی ایجنسیاں یقین کے ساتھ نہیں کہہ سکتیں، سلمان رشدی پورے یقین کے ساتھ کہہ رہا ہے

ِ پنجابی کی ایک کہاوت اس بات کو بڑی خوبصورتی سے بیان کرتی ہے، کہ

چور نالوں پنڈ کالی

مطلب یہ کہ چور سے زیادہ جلدی سامان کی گٹھری کو ہے ِ

اب چونکہ سلمان رشدی کی رسائی خفیہ معلومات کے خزانے سے لبریز علی بابا کی غار تک ہو ہی گئی ہے تو امید کی جا سکتی ہے کہ اب وہ اپنے مغربی آقاؤں کی خدمت میں یہ عرض کرنا بھی پسند کریں گے کہ پاکستان میں انتہا پسندی کا پودا لگانے اور اسے پاکستانیوں کے خون سے پروان چڑھانے والا اصل مالی کون ہے ِ ہم یہ بھی امید کرتے ہیں پاکستان میں ہونے والی دہشت گردی کی کاروائیوں میں شہید ہونے والے ہزاروں انسانوں کے اصل قاتلوں کو سزا دلوانے کے لئے بھی وہ مغرب سے کہیں گے ِ لیکن اگر وہ ایسا نہیں کر سکتے تو کیا یہ اچھا نہیں ہو گا کہ وہ اپنی زبان بند رکھیں ، غیر ضروری باتوں پہ توجہ نہ دیں، اپنے اگلے ناول کی تیاری کریں اور یہ سوچیں کہ اپنے ناول کو بیسٹ سیلر بنانے کے لئے وہ سلمانوں کے جزبات کو کیسے استعمال کر سکتے ہیں

A blog by Qasir M. Chaudhry