خبریں

  • ’ آر پار سفرکو آسان بنانے کی ضرورت‘ انہوں نے کہا کہ ہزاروں کی تعداد میں لوگ ایسے بھی ہیں جن کو روٹ پرمٹ جاری نہیں کیا گیا ہے اور ایسے لوگ بھی اپنوں کو ملنے کی تمنا رکھتے ہیں ۔گیلانی نے کہا کہ دونوں اطراف کی حکومتوں کو آر پار آواجاہی کے عمل کو مزید سخت کرنے کے بجائے ایسے لوگوں کو ملنے کا موقعہ آسانی سے فراہم کرنا چاہئے جو اپنوں کی یادوں میں دن رات آنسوں بہاتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایسے لوگوں کو تمام کراسنگ پوائنٹس پر تین بار آنے جانے کی سہولیات دی جانی چاہئے اور اس کی مدت ایک سال کے اندر استعمال کرنے کے بجائے تین سال پر محیط کیا جانا جائے ۔انہوں نے کہا ...
    Posted Sep 13, 2017, 3:19 PM by PFP Admin
  • کشمیر کے دس ہزار لاپتہ افراد کی حقوق کے لیے زندگی کے آخری سانس تک لڑتی رہوں گی ۔پروینہ آ ہنگر  انھوں نے کہا کہ بھارتی کشمیر کے دس ہزار لاپتہ افراد کی بازیابی کی جہدوجہد ان کا زندگی کی سب سے اولین ترجیح ہے جس کے لیے وہ زندگی کے آخری سانس تک لڑیں گی۔ ان کا کہنا تھا کہ کشمیر میں جبری گمشدگیو ں کے خاتمے اور گم شدہ شہریوں کی بازیابی کے حوالے سے انھیں کشمیر اور بھارت کے انسان دوست طبقات نے غیر معمولی تعاون کیا ہے ۔پریس فار پیس کے بانی اور کشمیری قلم کار ظفر اقبال نے پروینہ آہنگر کی خدمات کو زبر دست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں انسانی حقوق کے تحفظ کے لیے کشمیر کی آئرن لیڈی پروینہ آہن گر نے اپنے ادارے اے پی ڈی پی کے پلیٹ ...
    Posted Jun 9, 2014, 4:12 PM by Zafar Iqbal
  • تحفظ ماحولیات کے عالمی دن پر پی ایف پی کمیونٹی سکول کے بچوں کاقدرتی ماحول کے تحفظ کا عزم ۔ اس موقع پر پریس فار پیس کے چیئر مین بورڈ آف ٹرسٹیز امیر الدین مغل سکول کے نیلم پریس کلب کے صدر حافظ نصیر الدین ،پی ایف پی کمیونٹی سکول کے پرنسپل معین قریشی سکول کے طلبہ فائضہ سلطان ،سیف الاسلام اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمالیہ کے دامن میں واقع وادی نیلم ماحولیات ،جنگلات اور قدرتی وسائل کے حوالے سے بہت ہی اہم وادی ہے لیکن اس کے قدرتی وسائل بری طرح تباہ ہو رہے ہیں جنگلات کی بیدریغ کٹائی سے وادی میں درجہ حرارت دن بدن بڑھتا جا رہا ہے جس کے باعث صدیوں پرانے گلیشئرز پگھل رہے ہیں زمین کی بردگی کا سلسلہ جاری ہے پانی کے ذخائر میں مسلسل کمی واقع ہو رہی ...
    Posted Jun 9, 2014, 4:00 PM by Zafar Iqbal
  • پی ایف پی سکول کے طلبہ و طالبات کا تفریحی اور معلوماتی دورہ پریس فار پیس کمیونٹی سکول نیلم کے طلبہ و طالبات نےتعلیمی،تفریحی اور معلوماتی دورے سے بھرپور استفادہ کیا۔دورہ کے دوران پریس فار پیس کے چیئر مین بورڈ آف ٹریسٹیز امیر الدین مغل ،نیلم پریس کلب کے صدر حافظ نصیر الدین ،سکول کے اساتذہ معین قریشی اور توفیق قریشی بھی ہمراہ تھے جنہوں نے بچوں کو سیاحت اور وادی نیلم کے قدرتی وسائل کے حوالے سے معلومات دیں اس موقع پر پریس فار پیس کے سنئیرعہدے دار امیر الدین مغل نے دیگر تاریخی اور سیاحتی مقامات کے دورے کرانے کا اعلان کیا۔یادرہے یہ کمیونٹی سکول پریس فار پیس کی فلاحی سرگرمیوں کا حصہ ہے جس کے تحت ایک دور دراز علاقے کے مستحق اوربے سہارا بچوں کو گزشتہ ...
    Posted May 4, 2014, 3:16 PM by Zafar Iqbal
  • لائین آٖف کنٹرول پربھارتی جارحیت کے خلاف کوٹلی میں امن مارچ خودارادیت کی حمایت میں مختلف عبارات درج تھیں۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے خواجہ عطا محی دین،ڈاکٹرتوقیرگیلانی،اصغرسیٹھی ، لیاقت حیات نے سیزفائر کی خلاف ورزیوں اور آزادکشمیرکے مختلف علاقوں میں سویلین آبادی پربھارتی جارحیت کی شدید مذمت کی۔جے کے ایل ایف کے سربراہ ڈاکٹرتوقیرگیلانی نے کہا کہ کشمیری عوام تنازعہ کشمیر کے بنیادی فریق ہیں۔دونوں قابض ممالک اپنی افواج کو نکال کرکشمیریوں کو امن سے رہنے کا موقع دیں۔معروف سیاسی رہنما خواجہ عطا محی دین نے کہاکہ ھندوستان کشمیرکے اندر بڑے پیمانے پر انسانی حقوق کی پامالی کے بعد اب بزدلی پر اتر آیا ہے اور کنٹرول لائین پر نہتے لوگوں کونشانہ بنارہا ہے۔اصغرسیٹھی اور لیاقت حیات نے کہا کہ حکومت پاکستان معذرت خواہانہ رویہ ...
    Posted Aug 29, 2013, 2:40 PM by PFP Admin
  • وادی نیلم :خواتین کنٹرول لائین پر بھارتی جارحیت کے خلاف سڑکوں پر نکل آئیں امن کے لئے بینرز اور پلے کارڈ ز اٹھائے خواتین نے اس موقع پر عالمی دنیا سے بھی مطالبہ کیا کہ کنٹرول لائن پر گذشتہ کشیدگی کی وجہ سے چودہ سال تک وادی نیلم میں سکول نہیں کھولےجا سکے جس کی وجہ سے ایک پوری نسل ان پڑھ جوان ہو گئی ہے اگر باقی دنیا کے بچوں کو تعلیم کا حق تسلیم کیا گیا ہے تو کشمیریوں کے بچوں کو بھی یہ حق دیا جائے اور ہر اس اقدام سے احتراز کیا جائے جس سے کنٹرول لائن پر کشیدگی کو ہوا ملتی ہواس موقع پرخواتین کو یقین دلاتے ہوئے مقامی فوجی کمانڈر کا کہنا تھا کہ ان کا مطالبہ حکومت پاکستان تک پہنچا دیا جائے گا تاہم اگر بھارت ...
    Posted Mar 16, 2014, 4:41 PM by PFP Admin
  • سر کے بال کاٹ کرعورت پرتشدد کا نشانہ اور ناک کاٹنے کی کوشش سسرال والوں نے تشدد کر نے کے بعد مجھے ایک گاڑی میں بند کر کے اپنے میکے بھیج دیا میں اب خاوند کے ساتھ نہیں رہنا چاہتی اور مجھے اپنی جان کا خطرہ ہے ۔ اس دوران انسانی حقوق کی تنظیم جموں کشمیر ہیومن رائٹس موومنٹ کے صدر راجہ منیر اور پریس فار پیس کی ڈپٹی کو آرڈینیٹر روبینہ ناز نے کہا کہ ہم اس واقعے کی پُر زور مذمت کر تے ہیں اور تہمینہ پر تشدد کر نے والے عبدالغفور اور عبدالجبار کو فوری طور پر قانون کے حوالے کیا جائے ۔ اور مظلومہ کو فوری طور پر انصاف دلایا جائے ۔ انہوں نے آئی جی آزاد کشمیر اور چیف جسٹس آزاد کشمیر سے مطالبہ کیا کہ وہ اس واقع میں ...
    Posted Mar 24, 2013, 3:40 PM by PFP Admin
  • پاکستانی کشمیر میں توانائی کے منصوبے اس کے لیے ورلڈ بینک ، اسلامک ڈوپلمنٹ بینک اور ایشین ڈویلپمنٹ بینک نے قرض مہیا کیا ہے۔ منصوبے کی تعمیر کرنے والی کمپنی کے منیجر ایچ ایس سی آفتاب عالم نے وائس آف امریکہ کو بتایا کہ یہ آب وہوا دوست منصوبہ ہے جس کی تعمیر سے سالانہ تین سو ٹن مضرصحت گیس کاربن ڈائی آکسائیڈ کے اخراج میں کمی آئے گی اور اس منصوبے سے مظفرآباد شہر کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی اور دو پارکوں کی تعمیر بھی کی جائے گی۔پاکستانی کشمیر کے پرائیویٹ پاور سیل کے ڈائریکٹر جنرل فاروق حیدر گگرو نے وائس آف امریکہ کو بتایا کہ میر پور میں پرائیویٹ سیکٹر میں تعمیر ہونے والا 80 میگا واٹ کا ایک منصوبہ مکمل بھی ...
    Posted Mar 21, 2013, 3:20 PM by PFP Admin
  • عورتوں کے گلہ کاٹنے،قتل کرنے کے واقعات قابل مذمت ہیں۔فریال بٹ اعلی عدلیہ عورتوں کے خلاف بڑھتے ہوئے جرائم پر سوموٹو ایکشن لے کر مظلوم خواتین کے ورثاء کو انصاف فراہم کرے۔فریال بٹ انھوں نے مطالبہ کیاکہ پولیس ملزمان کو جلداز جلد گرفتارکر کے باغ، ہجیرہ، پلندری اور دیگر علاقوں میں عورتوں کے ٖخلاف سنگین جرائم اور قانون شکنی کے مرتکب ملزمان کو گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دے۔ہجیرہ میں ایک نہتی عورت کو سوتے میں گلہ کاٹ کر ہلاک کرنے کاواقعہ قابل مذمت اور شرمناک ہے۔ انھوں نے مطالبہ کیا ہے کہ چیف جسٹس ہائی کورٹ عورتوں کے خلاف بڑھتے ہوئے جرائم کے خاتمے کے لیے اپنا کردار ادا کرے اور سوموٹو ایکشن لے کر مظلوم خواتین کے ورثاء کو انصاف فراہم کرے۔ باغ نبیلہ قتل کیس پولیس ...
    Posted Mar 21, 2013, 11:43 AM by PFP Admin
  • باغ کی بہاریں کب لوٹیں گی سڑکیں خستہ حالی کا شکار ہیں، باغ میں موجود ادارے جہاں بیٹھے کمیشن خور قومی خزانے کو چونا لگانے میں مصروف ہیں ان اداروں کی کار کردگی صفر ہے ایرا،سیرا کی فائلوں،ویب سائٹس پر دنیا کی نظروں میں دھول جھونکنے کیلئے باغ کی تعمیر نو و بحالی کا کام سو فیصد مکمل دکھایا تو جا رہا ہے مگر اصل حقیقت بڑی بھیانک اور افسوس ناک ہے کہتے ہیں ،،جس ملک و قوم کے اداروں اور افراد میں رشوت،کمیشن اور سود خوری سرایت کر جائے اس قوم اور ملک کی تباہی و بربادی کو کوئی نہیں روک سکتا ،،بدقسمتی سے آج ہم بھی اسی ڈگر پر چل نکلے ہیں پتا نہیں ہمارا انجام کتنا بھیانک اور کتنا خوفناک ...
    Posted Mar 10, 2013, 3:36 PM by PFP Admin
  • باغ میں صحت عامہ کی بگڑتی ہوئی صورتحال ذرا ان صحت عامہ کے مراکز کی خبر تو لیجئے جہاں آپ کے نام کی تختیاں لوگوں کی بے بسی کی کہانیاں بیان کرتے آپ کو نظر آئیں گی بہت سارے مراکز ابھی بھی ڈاکٹرز،سٹاف، لیڈی ڈاکٹرز،نرسز،ادویات اور عمارات کے منتظر ہیں سردار قمر الزمان صاحب باغ کے عوام نے آپ کو اس لئے منتخب کیا تھا کیونکہ آپ ایک انقلابی سوچ و فکر رکھنے والے عوامی لیڈر ہیں عوام کے ساتھ آپ کا براہ راست رابطہ اور لگاؤ ہے مگر افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے کہ آپ کی وزارت کے ناک تلے سرکاری ہسپتالوں میں غریب مریضوں کے ساتھ جو انسانیت سوز اور بھیانک کھیل کھیلا جا رہا ہے آپ اس سے ابھی تک بے ...
    Posted Mar 4, 2013, 10:36 AM by PFP Admin
Showing posts 1 - 11 of 35. View more »

مضامین, مراسلے ,شاعری

  • کرشن چندر بحیثیت افسانہ نگار ڈاکٹر دلپذیر فتح پور، پونچھ جموںو کشمیر۔        کرشن چندر کی شخصیت تعارف کی مختاج نہیں انھوں نے اُردو فکشن کے سرمائے میں بیش ہا اضافے کئے۔انکی زبان میں رس اور جادو ہے۔گھلاوٹ، حلاوت اور بیاہے جانے ولی کیفیت ہے ۔انکی تخلیقات میں حسن کی لگن اور تڑپ، موج در موج اور انسان دوستی کوٹ کوٹ کر بھری ہوئی ہے۔انکی شخصیت ایک بہت ہزار شیوہ ہے۔جس کا بنیادی جوہر اسکی حسن پرستی اور حسن کاری ہے وہ نہ صرف ہندوستاں اور پاکستان میں مشہور ہیں بلکہ مشرق، جرمنی، روس اور دوسرے کئی ممالک میں بھیان کی تصانیف مشہور ہیں درد ہو یا طنز، رومانیت ہو یا حقیقت نگاریان کا قلم ہر مو قع پر ایسی دلکش ...
    Posted Sep 10, 2017, 5:00 PM by PFP Admin
  • اردو فکشن میں سماجی مسائل کی عکاسی (جموں کشمیر کے حوالے سے) محمد سلیمان حجام، ریسرچ اسکالر پنجابی یونی ورسٹی پٹیالہ  قدیم زمانے میں ادب کوصرف دل بہلانے اور وقت گزارنے کی چیز سمجھا جاتا تھالیکن آج کے زمانے میں ادب زندگی کا ترجمان ہے یعنی انسانی زندگی کے مسائل اس کا لازمی جُز بن گئے ہیں۔ یعنی ادب برائے ادب کے زمرے سے نکل کر ادب برائے زندگی کے مرحلے سے جڑ گیا۔اس کے پسِ منظر میں مختلف وجوہات کارفرما رہی ہیں۔سائنس کی ترقی سے نئے حالات پیدا ہوئے،زندگی کے مختلف شعبہ جات میں تبدیلیاں رونما ہونے لگیں،نئے نئے چلینج سامنے آئے ۔معاشی حالات بدلے۔ اس طرح سے ادب صرف تفن و طبع کا سامان ہی نہیں ہوتاہے بلکہ زندگی کا ترجمان بھی ہوتا ...
    Posted Sep 10, 2017, 4:48 PM by PFP Admin
  • بچوں کی تعلیم و تربیت علامہ محمد اقبالعلامہ محمد اقبال کا یہ مضمون پہلی بار رسالہ مخزن  جنوری ۱۹۰۲ء میں اور دوسری بار اسی رسالے میں اکتوبر ۱۹۱۷ء کو شائع ہوا۔ ازاں بعد سیّد عبدالواحد معینی نے مقالاتِ اقبال (مئی ۱۹۶۳ء) میں شامل اشاعت کیا۔(ادارہ)تمام قومی عروج کی جڑ بچوں کی تعلیم ہے۔ اگر طریق تعلیم علمی اصولوں پر مبنی ہو تو تھوڑے ہی عرصے میں تمام تمدنی شکایات کافور ہوجائیں اور دُنیوی زندگی ایک ایسا دل فریب نظّارہ معلوم ہو کہ اُس کے ظاہری حُسن کو مطعون کرنے والے فلسفی بھی اُس کی خوبیوں کے ثناخواں بن جائیں۔انسان کا سب سے پہلا فرض یہ ہے کہ دنیا کے لیے اس کا وجود زینت کا ...
    Posted Sep 10, 2017, 4:31 PM by PFP Admin
  • پاکستانی زراعت کے ستر سال ڈاکٹر مسعود احمد شاکردوکروڑ ۲۳لاکھ ہیکٹر [’ہیکٹر بین الاقوامی یونٹ ہے، جو ہمارے ڈھائی ایکڑ کے برابر ہوتا ہے] پر لہلہاتے کھیت، خوبانی، سیب، انگور، کِنوں، مالٹا، آم اور کھجور کے پھولوں پھلوں سے لدے باغات، دریاے سندھ، اس کے معاون دریائوں اور جھیلوں میں تیرتی انواع و اقسام کی مچھلیاں اور دیگر آبی پرندے، شمالی علاقہ جات، پنجاب، سندھ اور بلوچستان کی چراگاہوں میں چرتے دودھ اور گوشت فراہم کرنے والے کروڑوں مویشی اور فضائوں میں رقصاں لاکھوں رنگ برنگ پرندے___ یہ ۲۲کروڑ آبادی والا دنیا کا چھٹا گنجان آباد ملک پاکستان ہے۔ پاکستان دنیا بھر میں گندم، چاول، کپاس، گنا، پھل اور سبزیاں، دودھ اور گوشت کی پیداوار کے لحاظ سے ساتواں ...
    Posted Sep 10, 2017, 4:29 PM by PFP Admin
  • ڈاکٹر رتھ فاؤ ۔۔۔ ایک عظیم خاتون حاجی سرمیکی “ہم میں سے کوئی بھی کسی جنگ کو تونہیں روک سکتا، مگر ہم میں سے اکثر روحانی اور جسمانی ایذا میں کمی کے لئے مدد تو دے سکتے ہیں” یہ سادہ مگر پر جذبہ ایثار سے بھرا جملہ ڈاکٹر رتھ پفاو نے کہا تھا۔ ڈاکٹر رتھ پفاو ایک جرمن پری وش خاتون تھیں۔ جنہیں پاکستان کی سرکار نے انتھک جذبہ ایثار اور خدمت انسانیت کے اعتراف میں پاکستانی شہریت عطا کیا تھا۔ آپ ۱۹۲۹ میں ایک مسیحی خاندا ن میں پیدا ہوئیں ۔ آپ کی چار بہنیں اور ایک اکلوتا بھائی تھا۔ جب دوسری جنگ عظیم میں بموں اور میزائلوں نے آسمان سے آگ کے گولے برسائے تب آ پ کاگھر بھی شعلوں کی زد میں آکر جل گیا ...
    Posted Sep 10, 2017, 4:13 PM by PFP Admin
  • روہنگیا بحران: تاریخ اور حقائق تحقیق و تحریر: جلال الدین مغلاقوامِ متحدہ کی ایک حالیہ رپورٹ کے مطابق 25 اگست کے بعد سے میانمار سے روہنگیا پناہ گزینوں کی بنگلہ دیش ہجرت کے سلسلے میں تیزی آئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق ایک لاکھ پچاس ہزار کے قریب روہنگیا میانمار کی شمال مغربی ریاست رخائن میں جاری تشدد کی وجہ سے بھاگنے پر مجبور ہوئے ہیں۔اس بحران کا آغاز اس وقت ہوا جب روہنگیا جنگجوؤں نے پولیس چوکیوں پر حملے کر کے متعدد پولیس اہلکاروں کو مار ڈالا۔ اس کے بعد میانمار کی فوج نے روہنگیا کے خلاف آپریشن شروع کر دیا۔روہنگیا خواتین، بچوں اور مردوں کا کوئی ملک نہیں ہے یعنی ان کے پاس کسی بھی ملک کی شہریت نہیں۔ اگرچہ یہ ...
    Posted Sep 10, 2017, 3:36 PM by PFP Admin
  • ایک معصوم بچے کا قتل ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ذمہ دار کون ۔۔۔؟  مغربی میڈیا کی یلغار بھی اس طرح کے واقعات کی ایک بڑی وجہ ہے۔ مغربی اور بھارتی ثقافت ہماری رگ پے ہیں اس طرح سرایت کر چکی کہ ہم اپنے مدہب، اسلامی تعلیمات، اپنی روایات اور کلچر کو بھول چکے اور وہ ثقافت ہم پر حاوی ہو چکی ، اس حوالے سے پیمرا اور ٹی وی مالکان کو اپنی ذمہ داریاں ادا کرنی ہوں گی۔ ہم میں سے ہر شخص چاہے والدین ہوں، اساتذہ ہوں، اکابرین معاشرہ ہوں یا میڈیا کے نمائندگان، اپنی آنے والی نسلوں کو معاشرے اور ملک کا بہترین اور مفید شہری بنانے کے لئے اپنی اپنی ذمہ داریوں کا احساس کرنا ہو گا۔ یہی واحد صورت ہے ، جس سے معاشرتی انتشار کو قابو کیا جا سکتا ہے ...
    Posted May 4, 2014, 4:41 PM by Zafar Iqbal
  • کروتو علم کی سوداگری کرو  گو کہ والدین اور اساتذہ کا تال میل اور انکی مشترکہ کاوشوں سے ہی بچے کی بہتر تربیت و تعلیم ممکن ہے لیکن تین سال کا بچہ تو کورے کاغذ کی طرح ہوتا ہے، ایک اچھا استاد اور تعلیمی ماحول ہی اسکی اخلاقی تربیت ، سوچنے اور علم حاصل کرنے کی اہلیت و صلاحیت پیدا کرنے کا باعث بن سکتا ہے، سکول میں بچے کی جانب سے کی جانیوالی ہر حرکت کی جگہ فائن تو والدین ادا کر دیتے ہیں لیکن اسی سکول کی جانب سے دیئے جانیوالے علم کے باعث اگر بچہ سیکھنے اور سمجھنے کی صلاحیت سے ہی عاری ہو جائے تو اس کا جرمانہ تو آج تک کسی نے ادا نہیں کیا، داخلہ فارموں میں غیر ضروری سوالات ...
    Posted May 4, 2014, 4:04 PM by Zafar Iqbal
  • کیا پولیس کے لئے بھی قانون ہے دلچسپ بات یہ ہے کہ قانون کی رٹ لگانے والوں نے اس کیس میں لاقانونیت کی ایک ایسی مثال قائم کی جو تاریخ میں اس سے قبل نہیں ملتی کہ مستغیث خود ہی تفتیش کر رہا ہے۔ جہاں مدعی ہی منصف ہو وہاں انصاف کی توقع کیسے کی جا سکتی ہے؟ کس قدر لاقانونیت ہے کہ چوری کے اس کیس میں مستغیث مقدمہ ASIجاوید عباسی خود ہی اس کیس کی تفتیش بھی جاری رکھی ہوئی ہے جو پولیس کی تاریخ میں لاقانونیت کی ایک واضح مثال ہے۔ قانونی ماہرین کے مطابق زیر بحث مقدمہ پولیس کے آمرانہ اختیارات کی ایک بھیانک مثال بنتا دکھائی دیتا ہے۔ کیوں کہ یہ ایک ملزم کا قانونی حق ہے کہ اس کے خلاف ...
    Posted Apr 6, 2014, 2:13 PM by PFP Admin
  • کاش ۔۔۔۔میں بھی رئیوونڈ کا مور ہوتا! وہاں کے مکینوں کا واحدذریعہ معاش مال مویشی تھے نہ صرف انسان بلکہ مال مویشی بھی بدترین قحط کا شکار ہوئے میں کئی دن تک سوچتی رہی کہ اس موضوع پر لکھا جائے لیکن قارئین کرام! اگر سچ کہوں تو ان دل دہلا دینے والے مناظر کو دیکھ کر حوصلہ ہی نہ ہوا کہ قلم اٹھانے کی جسارت کر سکوں ہر لمحہ یہی سوال دل اور ذہن پر کچوکے لگاتا رہا کہ بحیثیت قوم ہم بے حسی کی اس انتہا پر پہنچ چکے کہ محسوس ہوتا ہے کہ ضمیر نام کی کوئی چیز ہمارے اندر نہیں رہی اور حکمرانوں کے توکیا کہنے؟ وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کا تعلق سید گرانے سے ہے جو حضور اکرمؐ کی آل میں ...
    Posted Mar 25, 2014, 11:14 AM by PFP Admin
  • یونان: عظیم ثقافتی ورثے کا امیں یونان کا موجودہ دستور1975میں منظور کیا گیا،اس سے قبل 1967سے 1974تک یہاں فوجی آمریت مسلط رہی۔1986ء میں اس دستور میں مزید ترامیم کی گئیں اور صدر کے اختیارات کا مزید تعین کیاگیا۔اب وہاں کے صدر کے پاس وسیع اختیارات ہیں اور صدر پارلیمنٹ سے پانچ پانچ سال کی دو مدتوں تک منتخب ہوسکتا ہے۔جبکہ وزیراعظم کی مدت انتخاب چار سال ہوتی ہے۔یہاں کی سیاسی پارٹیاں زیادہ تر شخصیتوں کے زیراثر ہوتی ہیں۔مملکت کو تیرہ انتظامی حصوں میں تقسیم کیاہواہے لیکن حکومت کا انتظام زیادہ تر مرکزیت کاہی محتاج ہے۔1974ء تک فوج بھی ملکی سیاسی معاملات میں دخیل رہی ہے لیکن اب ایسا نہیں ہے یا بہت کم ہے۔یونان میں جی ڈی پی ...
    Posted Mar 24, 2014, 2:12 PM by PFP Admin
  • حفاظتی دعوے ۔۔۔ اور لہو لہو قانون کی راہداریاں ///تحریر :۔ راحت فاروق ایڈووکیٹ /// یہ حادثہ حکومت اور سیکیورٹی اداروں کے لئے لمحہ فکریہ ہے کہ کون لوگ ہیں جو قانونی اداروں کو کمزور کرنے کے درپے ہیں، آج مختلف وجوہات اور تاویلیں پیش کی جا رہی ہیں کہ کچھ گرفتار دہشت گردوں کی عدالت میں پیشی تھی جس بناء پر یہ آپریشن کیا گیا، اسی طرح ایڈیشنل سیشن جج صاحب رفاقت اعوان شہید کے حوالے سے کہا جا رہا ہے کہ سابق صدر جنرل مشرف کوایک کیس میں ضمانت پر رہا کئے جانے کی وجہ سے انہیں ٹارگٹ کیا گیا یہ انتہائی تشویشناک صورتحال ہے کہ عدلیہ کو آزادانہ طور پر فیصلہ کرنے کی بھیانک انداز سے سزا دی جائے ، ایسی صورت میں انصاف کی فراہمی ممکن نہیں ہو ...
    Posted Mar 16, 2014, 4:35 PM by PFP Admin
Showing posts 1 - 12 of 46. View more »